Search This Blog

Latest

Tuesday, 19 March 2019

نوچ نوچ توڑا ہے کیا یہ ظلم تهوڑا ہے




وقت کے شکنجوں نے خواہشوں کے پهولوں کو
نوچ نوچ توڑا ہے کیا یہ ظلم تهوڑا ہے

No comments:

Post a Comment